پی ٹی آئی ملک تباہ کرنیوالے مافیاز کو نکیل ڈالنے میں بری طرح ناکام

فیصل آباد (احمد یٰسین) پاکستان تحریک انصاف نے برسر اقتدار آنے سے پہلے بھی اور بعد میں بھی اعلان کیا تھا کہ وہ ملک کو نقصان پہنچانے والے مافیا کو کیفر کردار تک پہنچائے گی ۔ پی ٹی آئی مسلسل اس نعرے کا پرچار کرتی رہی ہے مگر ابھی تک پی ٹی آئی عملی طور پر مافیاز کو نکیل ڈالنے میں ناکام بری طرح ناکام ثابت ہوئی ہے۔ نیوز لائن کے مطابق تحریک انصاف کا نعرہ ہی انقلابی اور عام آدمی کوامید دلانے والا تھا۔ پی ٹی آئی موروثی سیاست کو بھی مافیا گردان رہی تھی اور کرپشن کرنیوالوں کو بھی کیفر کردار تک پہنچانے کا عزم لئے ہوئے تھے۔ عوام کو بے جا تنگ کرنیوالی افسر شاہی کیخلاف بھی بھرپور ایکشن کی امید دلائی جارہی تھی جبکہ ملک لوٹنے والے سیاستدانوں کو بھی عبرتناک انجام تک پہنچانے کا نعرہ مستانہ بلند کیا گیا تھا۔ قبضہ مافیا کیلئے پی ٹی آئی کے کاغذوں میں امان تھی نہ ٹیکس چوری کرنیوالوں کو معافی دینے کی کوئی بات سننے کو تیار تھا ۔ اقتدار میں آتے ہی پی ٹی آئی اپنے اعلانات کو عملی شکل دینے میں کامیاب نہیں ہو پائی۔ ابھی تک ٹیکس چور مافیا کیخلاف کوئی ایسا ڑا ایکشن ہوا نہ ٹیکس چوری میں ملوث سرمایہ دار مافیاز کو نکیل ڈالنے کے نعرے کو عملی شکل مل سکی۔ ٹیکس چوری روکنے کی بجائے ایف بی آر آج بھی ٹیکس چوروں کو درمیانی راستہ دینے کی بات کرتا ہے۔ ٹیکس چوری قومی جرم ہے اس پر کوئی دو رائے نہیں مگر ٹیکس چور کو کیفر کردار تک پہنچانے میں رکاوٹ خود اسی سسٹم کے اندر سے آرہی ہیں۔سرکاری زمینوں پر قبضہ کرنیوالا مافیا بھی ابھی تک قانون کی گرفت نہیں آسکا۔ سہانے اعلانات اور دکھاوے کو طور پر انٹی کرپشن کے ذریعے کچھ قبضے واگزار کروائے گئے مگر قبضہ کرنیوالے کسی ایک بھی شخص کیخلاف مقدمہ درج نہیں ہوا۔ بھکر میں آج بھی محکمہ جنگلات کی ایک لاکھ ایکڑ رقبے پر مافیا کا قبضہ ہے اور اس قبضے کو خود پی ٹی آئی کا مقامی ایم پی اے سپورٹ کررہا ہے۔ بھتہ خور مافیا آج بھی سرگرم ہے۔ قانون نافذ کرنیوالے ادارے بھتہ خوری روکنے میں ناکامی پر اس کے مقدمات روک کر سب اچھا کی رپورٹ کرنے میں سرگرم رہتے ہیں۔ ڈرگ مافیا اب صرف نعروں تک ہی رہ گیا ہے۔ ڈرگ مافیا کے ارکان معاشرے کے معزز شہری بن کر نظام کو دھوکہ دینے میں مگن ہیں۔کرپٹ مافیا کیخلاف بھی پی ٹی آئی کچھ کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکی۔ روزانہ اربوں روپے کی کرپشن رک سکی نہ مہنگائی مافیا کو قابو کرنے میں کامیابی نصیب ہوئی۔فیصل آباد پولیس میں بہت بڑی تعداد میں جرائم پیشہ عناصر کے ساتھی ہیں۔ ہزاروں کی تعداد میں خود پولیس والے مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہیں۔ آر پی او فیصل آباد ان کے بارے میں کھلے عام بات کرتے ہیں مگر مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث اہلکاروں کو محکمے سے فارغ کرنے میں وہ بھی ناکام ہیں۔ مافیاز کی بدستور پاکستان پر حکمرانی ہے۔ کرپشن رک سکی نہ عام کو ریلیف مل سکا ۔ پی ٹی آئی کو کامیابی کیا ملی اس کا جواب خود پی ٹی آئی والے بھی نہیں ڈھونڈ پارہے۔

Related posts