پراپرٹی فراڈ: ن لیگی ایم پی اے کے خلاف اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع

فیصل آباد (ندیم شہزاد) مسلم لیگ ن کے ٹکٹ کے باوجود پی ٹی آئی کے ایم این اے کے ساتھ مقامی اتحاد بناکر الیکشن جیتنے والے فیصل آباد سے تعلیق رکھنے والے ن لیگی ایم پی اے مہر حامد رشید اور ان کے بھائی مہر عبدالرؤف رشیداور ان کے پارٹنرز کیخلاف پراپرٹی فراڈ میں ملوث ہونے اور آمدن سے زائد اثاثہ جات بنانے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔ تحقیقاتی ادارے دونوں بھائیوں کے اثاثہ جات اور پراپرٹی فراڈ کی تفصیلات اکٹھی کرنے کیلئے اقدامات کررہے ہیں۔ نیوز لائن کے مطابق فیصل آباد سے مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر جیتنے والے رکن پنجاب اسمبلی مہر حامد رشید اور ان کے بھائی کیخلاف اعلیٰ سطحی تحقیقات کئے جانے کی رپورٹس سامنے آئی ہیں۔ دونوں بھائیوں کیخلاف شکایات سامنے آچکی ہیں کہ انہوں نے اسماعیل سٹی ‘ اسماعیل ویلی اور متعدد دیگر غیرقانونی رہائشی سکیمیں بنا کر عوام کے ساتھ فراڈ اور دھوکہ دہی کی۔ ان کی ایک بھی رہائشی سکیم منظور شدہ نہیں ہے تاہم اس کے باوجود انہوںنے غیرقانونی رہائشی سکیموں کے سکنی و کمرشل پلاٹس فروخت کئے اور عوام کو کسی قسم کوئی بنیادی رہائشی سہولت فراہم کئے بغیر رفوچکر ہوگئے۔ وفاقی حکومت کے ادارے نیب اور پنجاب حکومت کے ادارے انٹی کرپشن کے ذرائع کے مطابق مہر حامد رشید ‘ انکے بھائی مہر عبدالرؤف رشید اور ان کے پارٹنرز کیخلاف تحقیقات کی جارہی ہیں ۔ نیب نے باضابطہ دونوں بھائیوں کیخلاف انکوائری شروع کردی ہے جبکہ انٹی کرپشن میں ان کے حوالے سے پہلے ہی پراپرٹی فراڈ کی متعدد شکایات پر انکوائریاں ہورہی ہیں۔ مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر الیکشن 2018میں حصہ لینے والے مہر حامد رشید کے حوالے انتہائی دلچسپ صورتحال اس وقت سامنے آئی تھی جب انہوں نے اپنی ہی جماعت کے ایم این اے کے امیدوار سابق وزیر مملکت خزانہ رانا محمد افضل کو شکست سے دوچار کرنے کیلئے تحریک انصاف کے ایم این اے کے امیدوار راجہ ریاض احمد کے ساتھ اتحاد بنا لیا تھا۔ ایم این اے کی سیٹ پی ٹی آئی جیت گئی جبکہ ایم پی اے کی سیٹ مسلم لیگ ن کے مہر حامد رشید نے جیت لی تھی۔مہر حامد رشید اور ان کے بھائی مہر عبدالرؤف رشید کے حوالے سے ایک دلچسپ حقیقت یہ بھی سامنے آئی تھی کہ وہ بنکوں میں اپنے اکاؤنٹس میں تو چند لاکھ سے زائد رقم نہیں رکھتے مگر بنک اکاؤنٹس کی نسبت اپنے گھر میں بنے لاکرز میں کروڑوں روپے نقد رکھنے کو ترجیح دیتے ہیں۔ بعد ازاں مہر حامد رشید کیخلاف غیرقانونی ہاؤسنگ کالونیوں کے معاملے پر انٹی کرپشن میں انکوائری ہونے کی اطلاعات بھی سامنے آتی رہیں مگر معاملہ دب گیا۔ اب نیب نے مہر حامد رشید ‘ مہر عبدالرؤف رشید کیخلاف تحقیقات شروع کردی ہیں ۔

نیب میں ہونیوالی انکوائری کے حوالے سے رابطہ کرنے پر مہر حامد رشید کے بھائی مہر عبدالرؤف رشید کا کہنا تھا کہ ابھی انہیں نیب کی طرف سے کوئی نوٹس نہیں ملا۔ نوٹس ملنے پر ہی علم ہوسکے گا کہ نیب کن معاملات کی انکوائری کررہا ہے

Related posts