کچہری بازار میں سرکاری زمین پر غیرقانونی پرائیویٹ پلازے کی تعمیر

فیصل آباد(نیوز لائن) فیصل آباد کے تاریخی ذیل کے گھر کے سامنے کچہری بازار کی اندرونی گلی میں سرکاری زمین پر غیرقانونی پرائیویٹ پلازے کی تعمیر کی جانے لگے۔ ہائی رائز ڈیزائن کمیٹی کی منظوری کے بغیر نقشے سے ہٹ کر تعمیر کئے جانے والے پلازے کے خلاف پرائم منسٹر پورٹل پر شکائت کے باوجود میونسپل کارپوریشن حکام کارروائی سے گریزاں ہیں ۔ نیوز لائن کے مطابق فیصل آباد کے تاریخی اہمیت کے حامل ذیل گھر کے سامنے کچہری بازار کی اندرونی گلی (گلی وکیلاں نمبرپانچ ) میں غیرقانونی طور پر سرکاری زمین کو لپیٹ میں لے کر ایک پلازے کی تعمیر کی جارہی ہے۔ پلازے کی تعمیر کیلئے قانون کے مطابق ہائی رائز ڈیزائن کمیٹی سے منظوری بھی نہیں لی گئی جبکہ تعمیرات بھی نقشے کے مطابق نہیں کی جارہیں۔ پلازہ تعمیر کرنے والوں نے گلی اور بازار کے بڑے حصے کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے جس سے بازار میں سے گزرنے والوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ ایک شہری نے پلازے کی تعمیر کے خلاف غیرقانونی وزیر اعظم عمران خان کے پورٹل پر شکائت کا اندراج کروایا تو ڈپٹی کمشنر فیصل آباد کو معاملے کی انکوائری کا حکم دیدیا گیاہے۔ پلازے کی غیرقانونی اور نقشے ہے ہٹ کی تعمیر کیخلاف شکائت پر چیف آفیسر میونسپل کارپوریشن فیصل آباد نے بھی کاروائی کی اور تعمیرات رکوا دیں مگر بعد ازاں بااثر مالکان کے اثرورسوخ کے سامنے مجبور ہو کر میونسپل کارپوریشن حکام نے بھی کارروائی روک دی ۔

Related posts