ٹائپ رائٹر اور “کی بورڈ” کی دلچسپ تاریخ

کی بورڈ کی ترتیب جو کہ ھم ہر روز استعمال کرتے ہیں کی کہانی کافی قدیم ہے۔ کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ کی بورڈ کی ترتیب خود کی بورڈ کی ابتداء سے بھی پرانی ہے اور کچھ کا خیال ہے کہ کی بورڈ ٹائپ رائٹر کے متغیرات میں سے ہے۔ تاہم، دلائل کے اعتبار سے کہانی کا آغاز 1875 سے کرتے ہیں، جب “کستوفر شولس” نے ایمس ڈنسمور کے اشتراک سے پہلے سے موجود کی بورڈ میں کچھ جدت طرازی کا اطلاق کیا تاکہ حروف کی ترتیب بہت زیارہ…

Read More

حکمرانوں کے جاہ و جبروت کی نشانی‘ زمانے کی ناقدری کا شکار

اہراموں کی تعمیر پُرانی بادشاہت کے دور میں منظر عام پر آئی تھی (2613 قبل از مسیح)۔ یہ تیسرے شاہی سلسلے کا فرعون ڈجوسر تھا جس نے پتھروں سے اہرام تعمیر کروایا اور اس نے اہرام کی دیواروں کو سیڑھیوں کی شکل میں ترتیب دیا۔ یہ دیواریں 60 میٹر (196.8 فٹ) بلند تھیں۔ تیسرے شاہی سلسلے کے فرعون سنی فیرو نے بھی مخروطی شکل کا مقبرہ تعمیر کروایا۔ اسی فرعون نے اہرام کے نظریے کو نئی طرز عطا کی اور اس کی سیڑھیوں کو پُر کرتے ہوئے اسے ہموار مخروطی…

Read More

مار کھانے پر سزا:مارنے والے کو انعام

ایک شخص مدتوں کا بیمار زندگی سے لاچار و بیزار طبیب کے پاس گیا اور کہنے لگا جناب مجھے کوئی دوا دیں تاکہ صحت پائوں اور آپ کی جان و مال کو دعائیں دوں۔ طبیب نے نبض پر انگلیاں رکھیں اورسمجھ گیا کہ اس کے بدن سے جان نکل چکی ہے اب محض چلتی پھرتی لاش ہے۔ صحت کی امید زرہ برابر نہیں۔ دوا دارو کر کے مفت میں اس غریب کو اور ہلکان کرنا ہے لہذا اس نے کہا میاں تم یہ سب دوا دارو ایک قلم موقوف کرو…

Read More

شہدا نے خون دے کر دین کی آبیاری کی

شہدائے اسلام نے اپنا خون دیکر دین کی آبیاری کی جس سے اسلام کے گلشن میں بہار آئی اگر یہ لوگ مصلحت کا شکار ہو کر حالات سے سمجھوتہ کرلیتے تو آج اسلام کا دنیا پر یہ نقشہ نہ ہوتا جو آج موجود ہے۔ ان خیالات کا اظہار مولانا صاحبزادہ امداد الحسن نعمانی’ مولانا سید غضنفر الرحمن’ مولانا محمد اقبال تنکاروی’ مولانا علی انور’ مفتی سیف اﷲ ‘ علامہ اسماعیل حقانی و دیگر علماء کرام نے مسجد نور ختم نبوت فارسٹ گیٹ لندن میں منعقدہ شہدائے اسلام کانفرنس میں کیا۔…

Read More