شوگر ملز نے کسانوں کے اربوں روپے دبا رکھے ہیں:سردار ظفر


فیصل آباد( نیوزلائن)جماعت اسلامی کے ضلعی امیر سردار ظفر حسین خان نے کہا ہے کہ گنے کے کاشتکاروں کامعاشی استحصال کسی بھی صورت میں قبول نہیں کریں گے۔ حکومت پنجاب اپنے ہی مقرر کردہ نرخ 180روپے ادا کرنے کی بجائے لیت و لعل سے کام لے رہی ہے ۔کین ایکٹ 1934 کے تحت تما م شوگر ملیں اپنے قریبی ایریاز میں کنڈے لگانے کی پابند ہے مگر اس پر عمل درآمد نہیں ہو رہا۔ پنجاب کی شوگر ملوں نے بھی غریب کسانوں کے اربوں روپے غصب کر رکھے ہیں۔ حکومت پنجاب مسلسل اس معاملے میں مجرمانہ غفلت،بے حسی اور ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کر رہی ہے جسکی وجہ سے گنے کے کاشت کاروں کا مسئلہ ایک سنگین شکل اختیار کر چکا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کے اپنے اعدادوشمارکے مطابق گنے کی کاشت پر 174روپے فی من لاگت آتی ہے۔کسانوں کو پرمٹ نہیں دیئے جا رہے۔

Related posts