وزیراعلی کا دورہ چنیوٹ،ارکان اسمبلی ،ن لیگی قیادت کا بائیکاٹ


چنیوٹ (نیوزلائن)وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف چنیوٹ کے دورے پر گئے توان کے استقبال کے لئے مسلم لیگ ن کا کوئی رکن اسمبلی نہ آیا اور وہ سٹیج پر اکیلے ہی بیٹھے رہے ، شہباز شریف کی اس تنہائی کی تصویریں سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہورہی ہیں۔ نیوزلائن کے مطابق جب شہباز شریف منگل کے روز چنیوٹ کے دورے پر آئے تو وہاں علاقائی قیادت میں سے کسی کو موجودنہ پایا جو ان کے لئے باعث شرمند گی بنا۔ن لیگ کے ٹکٹ سے الیکشن لڑنے والے ایم این اے اور ایم پی ایز سٹیج سے غیر حاضر تھے۔  وزیر اعلیٰ کے دورے کے دوران ارکان قومی اسمبلی قیصر احمد شیخ اور غلام محمد لالی سمیت مسلم لیگ ن کی مقامی قیا دت اور ارکان اسمبلی کا تقریب میں شرکت سے انکار کردیا۔ مولانا الیاس چنیوٹی بھی تقریب ختم ہو نے سے چند منٹ قبل پہنچے ۔وزیر اعلیٰ چنیوٹ پہنچے تو کمشنر فیصل آباد مومن علی آغا، آر پی او بلال صدیق کمیانہ، ڈپٹی کمشنر رائے منظور حسین ناصر ،ڈی پی او رانا طاہر رحمن خان و لوکل انتظامیہ نے ان کا استقبال کیا۔ ایم پی ایز مولانا رحمت اللہ، مہر امتیاز لالی، مہر ثقلین انور سپرا جبکہ ایم این ایز مہر غلام محمد لالی اورقیصر احمد شیخ سٹیج سے غائب تھے، البتہ کچھ دیر بعدایم پی اے الیاس چنیوٹی، مولانا رحمت اللہ، مہر ثقلین انور سپراسٹیج پر آگئے تاہم سٹیج پھر بھی خالی رہا جس کے بعد میونسپل کمیٹی کے چیئرمین مہر خالد اور ضلع کونسل کے چیئرمین ثقلین سنجنا کو سٹیج پر سیٹیں پر کرنے کے لئے بلایا گیا۔ بعد ازاں وزیراعلیٰ کے ضلعی ہسپتال کے دورے پر بھی صرف ایم پی اے الیاس چنیوٹی ہی ان کے ساتھ تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال چنیوٹ آمد کے موقع پر مسائل کے شکار عوام نے انتظامیہ کیخلاف ناقص انتظامات اور سہولیات کیخلاف شدید احتجاج کیا . ڈی ایچ کیو سے ملحقہ مارکیٹ بند کروا دی گئی۔ہسپتال میں جیمرز لگا کر موبائل سروس ختم کر دی گئی۔وزیراعلی سیکورٹی گارڈز کے نرغے میں رہے کسی کو قریب آنے کی اجازت نہ ملی۔ ذرائع کے مطابق ایم پی ایز اور ایم این ایز نے پنجاب حکومت کے چنیوٹ میں منصوبوں پر توجہ نہ دینے اور فنڈز جاری نہ کرنے کی وجہ سے تقریب میں حصہ نہیں لیا۔ غیر حاضر رہنے والے بعض لیگی ارکان تحریک انصاف سمیت دوسری جماعتوں سے بھی رابطے میں ہیں۔

Related posts