الیکشن 2018: فیصل آباد میں پیپلزپارٹی گیم سے آؤٹ نہیں ہوئی


فیصل آباد(احمد یٰسین)الیکشن 2018کے دوران فیصل آباد میں مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف سمیت کسی بھی پارٹی کے اکثریت لینے کا مکان نہیں ہے۔ پیپلزپارٹی بھی گیم سے آؤٹ نہیں ہوئی جبکہ آزاد امیدوار بھی جیتنے کی پوزیشن میں نظر آرہے ہیں۔نیوزلائن کے مطابق قومی اسمبلی کے دس حلقوں میں کوئی ایک بھی پارٹی واضح اکثریت حاصل کرتی دکھائی نہیں دے رہی۔حتمی نتائج تو 25جولائی کی پولنگ کے بعد ہی سامنے آئیں گے تاہم پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ن کے کلین سویپ کے دعوے بری طرح فلاپ ہوتے دکھائی دینے لگے ہیں۔ بلند بانگ دعووں کیساتھ میدان میں اترنے والی تحریک انصاف کے حصے میں صرف دو سے تین سیٹیں ہی آتی دکھائی دیتی ہیں۔ ابھی تک کی صورتحال میں پی ٹی آئی کی ایک سیٹ کلیئر ہے مگر دو سے تین حلقوں میں اس کے امیدوار مضبوط اور مقابلہ کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ فیصل آباد کے دیہی علاقوں میں پی پی پی کا ووٹ بنک دوبارہ دکھائی دینے لگا ہے اور پانچ حلقوں میں اس کے امیدوار بھرپور مقابلہ کرتے دکھائی دیتے ہیں ۔ ایک حلقے میں تو ان کے مخالفین نظر بھی نہیں آرہے۔میاں نواز شریف اور مریم نوازکی سزا‘ کرپشن الزامات‘ میڈیا ٹرائل کے باوجود فیصل آباد میں مسلم لیگ ن اپنی موجودگی کا احساس دلا رہی ہے۔ پی ایم ایل این کا ووٹر ناراض اور الجھن کا شکار تو نظر آرہا ہے مگر ایسا نہیں کہ وہ مکمل طور پر ختم اور پارٹی ’’ٹھس ‘‘ہو چکی۔ دو حلقوں میں آزاد امیدوار بھرپورمقابلہ کرتے دکھائی دیتے ہیں ۔ سیاسی حلقوں کے مطابق فیصل آباد میں کوئی بھی جماعت اکثریت حاصل نہیں کرسکے گی۔ تینوں بڑی جماعتوں کے حصے میں دو دو تین تین سیٹیں آسکتی ہیں۔جبکہ آزاد امیدوار بھی جیت کر فیصل آباد میں نئی سیاسی بنیاد رکھیں گے۔

Related posts