فیصل آباد میں قومی اسمبلی کے10حلقوں سے 209امیدوار


فیصل آباد(احمد یٰسین)فیصل آباد میں قومی اسمبلی کے دس حلقوں سے 209امیدواروں کے کاغذات نامزدگی منظور کر لئے گئے ہیں۔ قومی اسمبلی کے کسی بھی حلقے سے مسلم لیگ ن ‘ پی ٹی آئی ‘ پیپلزپارٹی کے امیدواروں کے کاغذات مسترد نہیں ہوئے ۔ الیکشن کمیشن کی رپورٹ کے مطابق فیصل آباد کے قومی اسمبلی کے دس حلقوں سے 225 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کروائے تھے 16امیدواروں کے کاغذات منظور نہ ہوسکے جبکہ 209 امیدواروں کے کاغذات منظور کرکے انہیں الیکشن میں حصہ لینے کی اجازت دیدی گئی۔الیکشن کمیشن کی دستاویزات کے مطابق قومی اسمبلی کے حلقہ این اے101 میں 33امیدواروں کے کاغذات منظور ہوئے اس حلقے سے چیئرمین ضلع کونسل زاہد نذیر کے بیٹے مسعود نذیر ‘ مسلم لیگ ن کے رہنماحامد رشید‘ مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے آزاد علی تبسم‘سابق ن لیگی ایم این اے عاصم نذیر‘پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر ظفر ذوالقرنین ‘ مسلم لیگ ن کے سابق ایم این اے غلام رسول ساہی‘پیپلزپارٹی کے ضلعی صدر اور سابق ایم این اے طارق محمود باجوہ ‘ واجد مصطفی باجوہ‘پی ٹی آئی کے رہنما فواد احمد چیمہ‘پی ٹی آئی رہنما سلیم جہانگیر چٹھہ کے کاغذات بھی منظور کرلئے گئے ہیں۔ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 102 سے 28امیدواروں کے کاغذات کو ریٹرننگ آفیسر نے منظوری کی سند دی ۔ اس حلقے سے پیپلز پارٹی کے سابق ایم پی اے رائے شاہجہاں کھرل‘ پی ٹی آئی کے امیدوار نواب شیر وسیر ‘ مسلم لیگ ق چھوڑ کر پی ٹی آئی میں آنیوالے چوہدری ظہیر الدین‘مسلم لیگ ق کے سابق ٹاؤن ناظم چوہدری علی اختر‘مسلم لیگ ق کے سابق وفاقی وزیر قانون وصی ظفر کے صاحبزادے عمیر وصی‘ مسلم لیگ کے رہنما سابق ٹاؤن ناظم جڑانوالہ محمد اکرم چوہدری‘مسلم لیگ ن کے امیدوار سابق وزیر مملکت طلال بدر چوہدری‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے رائے حیدر علی ‘مصطفی شہزاد‘ ریاض احمد‘ سعدیہ اختر‘ عرفان شاہد وسیر‘ تحریک لبیک کے سید طیب رضا شاہ‘ آل پاکستان مسلم لیگ کے رشید احمد خاں‘ ایم شفقت رانا‘ تحریک اللہ اکبر کے کاشف الطاف بٹ‘ ارشد محمود‘ محمد فضل عظیم‘ محمد اشرف چوہدری‘ محمد بلال بدر‘ ثناللہ قمر باجوہ‘ محمد طیب عارف کے کاغذات نامزدگی منظوری حاصل کرسکے ۔ این اے103 سے 21امیدوار میدان میں رہ گئے ہیں۔ میدان میں رہنے والوں میں پیپلز پارٹی کے سابق ایم این اے شہادت علی خاں بلوچ‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے رائے اعجاز حسین‘پی ٹی آئی کے امیدوار سعد اللہ بلوچ‘ محمد علی بلوچ‘مسلم لیگ ن کے امیدوار علی گوہر خاں‘سابق ایم این اے رجب بلوچ کی اہلیہ عائشہ رجب علی‘سابق ایم پی اے احسن ریاض فتیانہ بھی شامل ہیں۔قومی اسمبلی کے حلقہ این اے104 سے 21کاغذات منظور ہوئے ۔ اس حلقے سے پیپلز پارٹی کے سابق وفاقی وزیر رانا فاروق سعید خاں ‘ پی ٹی آئی کے امیدوار سردار دلدار احمد چیمہ‘مسلم لیگ ن کے امیدوار چوہدری شہباز بابر گجر‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے عارف محمود گل‘ خالد محمود گل‘سابق ٹاؤن ناظم سمندری مظہر علی گل کے کاغذات منظور ہوچکے ہیں۔قومی اسمبلی کے حلقہ این اے105 سے 22امیدواروں کے کاغذات نامزدگی منطور ہوئے ہیں۔ پی ٹی آئی کے امیدوار راناآصف توصیف‘مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر قاسم فاروق‘سابق ایم این اے میاں محمد فاروق‘سابق چیئرمین ضلع کونسل معظم فاروق‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم این اے محمد عاصم نذیر ‘ پی ٹی آئی کے رہنما رضانصراللہ گھمن کے کاغذات بھی منظورکرلئے گئے ہیں۔این اے106 سے کل 13کاغذات منظور ہوئے ہیں جن میں مسلم لیگ ن کے سابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ خاں‘سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین اور سابق ایم این اے صاحبزادہ فضل کریم کے بیٹے صاحبزادہ حامد رضا ‘ پیپلزپارٹی کے ضلعی صدر اور سابق ایم این اے چوہدری سعید اقبال ‘ پی ٹی آئی کے امیدوار ڈاکٹر نثار احمد‘ پی ٹی آئی کے رہنما جہانزیب امتیاز گل‘رانا ثناء اللہ کے صاحبزادے احمد شہریاربھی شامل ہیں۔قومی اسمبلی کے حلقہ این اے107سے بھی 13کاغذات منظور ہوئے ہیں۔اس حلقے سے سابق وزیر مملکت حاجی اکرم انصاری ‘پی ٹی آئی کے امیدوار خرم شہزاد‘ پیپلزپارٹی کے امیدوار ملک سردار ‘سابق وفاقی وزیر زاہد سرفراز کے صاحبزادے علی سرفراز‘ممتاز کاہلوں‘اسد نادر پرویز کے کاغذات بھی منظور کر لئے گئے ہیں۔این اے108سے 15کاغذات منظور کئے گئے ہیں مسلم لیگ ن کے عابد شیر علی ‘ پی ٹی آئی کے فرخ حبیب‘ پیپلزپارٹی کے ملک اصغر علی قیصراور ایم ایم اے سید زکریا شاہ اس حلقے میں ایک دوسرے کے مدمقابل ہوں گے۔این اے109 سے 20کاغذات نامزدگی منظور ہوئے ہیں۔اس حلقے سے پی ٹی آئی کے امیدوار فیض اللہ کموکا‘پی ٹی آئی کے سٹی صدر اسد معظم‘ مسلم لیگ ن کے سابق ایم این اے میاں عبدالمنان‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے شیخ اعجاز احمد ‘ پیپلز پارٹی کے سابق ایم این اے اعجاز ورک کے کاغذات نامزدگی منظور ہو گئے ہیں۔قومی اسمبلی کے حلقہ این اے110سے 23کاغذات منظور ہوئے ہیں یہاں سے مسلم لیگ ن کے سابق وزیر مملکت رانا محمد افضل خاں‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے ملک محمد نواز‘ن لیگی رہنما مہر حامد رشید‘مسلم لیگ ن یوتھ ونگ پنجاب کے جنرل سیکرٹری کاشف نواز رندھاوا‘پی ٹی آئی کے امیدوار راجہ ریاض احمد‘پی ٹی آئی کے سٹی جنرل سیکرٹری ڈاکٹر حسن مسعود‘سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا‘مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے حاجی الیاس انصاری کے کاغذات منظور کر لئے گئے ہیں۔

Related posts