اقبال کا فی میل شاہین

اگرچہ سکول کے دنوں میں ہم پر زیادہ پابندیاں تو نہیں تھیں لیکن پھر بھی مرغیوں کی طرح کڑیوں بالیوں کو بھی کہیں نہ کہیں سے تو ڈکنا ہی پڑتا ہے سو ہم پر بھی اسی اصول کا اطلاق ہواپھر بھی ہم نظر بچا کر کبھی کوئی ایسی حرکت کر ہی لیتے جس کے جرمانے سے بعد میں استانیاں سموسے پکوڑے کھاتیں اور ہمیں مرتے کیا نہ کرتے کے مصداق چارو ناچار گھر سے لایا اچار پراٹھا ہی زہر مار کرنا پڑتا اور اس وقت تو سینے پر سانپ ہی…

Read More